مسلم لیگ ن کے ایم این اے نے وزیراعظم کے معاون کا عہدہ ٹھکرا دیا۔

1

اسلام آباد:

مسلم لیگ ن کے ایم این اے چوہدری عابد رضا نے وزیر اعظم کے معاون خصوصی کا عہدہ دینے سے انکار کرتے ہوئے وزیر اعظم شہباز شریف کو اپنے تحفظات سے آگاہ کیا جس سے حکمران اتحاد میں شامل جماعتوں کے درمیان اقتدار کی کشمکش شروع ہو گئی۔

ایک دن پہلے، مسٹر رضا کو وزیراعظم کا مشیر مقرر کیا گیا تھا، اور اس سے متعلق نوٹس بھی جاری کیا گیا تھا۔

تاہم، رضا نے جگہ لینے سے انکار کر دیا اور نوٹس واپس لینے کی درخواست کی۔

اس سلسلے میں انہوں نے وزیر اعظم شہباز سے ملاقات کی اور انہیں ضلع گجرات کی سیاست کے بارے میں اپنے تحفظات سے آگاہ کیا جہاں ان کا حلقہ ہے۔

رضا نے شکایت کی کہ گجرات کے ایم این اے ہونے کے باوجود انہیں وہاں کوئی اختیار نہیں ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ گجرات میں تمام تر اقتدار مسلم لیگ (ق) کے پاس ہے، جس کی قیادت حکومت کے اتحادی چودھری شجاعت حسین کر رہے ہیں۔

گجرات حکومت نے شجاعت کے بیٹوں، مرکزی وزراء چوہدری سالک حسین اور شافع حسین کے حکم پر عمل کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ مسلم لیگ (ق) ایسے رویے کا سہارا لے کر اپنے لیے مسائل پیدا کر رہی ہے۔

رضا نے وزیر اعظم شہباز سے کہا کہ وہ معاون خصوصی بننے کے بجائے اپنے حلقے کے مکینوں کی بطور پارٹی کارکن کی خدمت جاری رکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اس عہدے کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا کیونکہ ضلع گجرات میں تمام اختیارات سالک حسین کے پاس ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ضلع گجرات میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی کی سیاست کے خاتمے کے لیے مسلم لیگ (ق) اور مسلم لیگ (ن) کو مل کر کام کرنا چاہیے۔

انہوں نے دعویٰ کیا، "سالک حسین اور میں مل کر ضلع گجرات میں پرویز الٰہی کے اثر و رسوخ کو ختم کر سکتے ہیں۔”

رضا چاہتے تھے کہ وزیر اعظم یہ معاملہ شجاعت کے ساتھ اٹھائے۔

مسلم لیگ ن کے ایم این اے 2013 میں حلقہ این اے 107 (گجرات-IV) سے مسلم لیگ ن کے امیدوار کے طور پر قومی اسمبلی کے لیے منتخب ہوئے تھے۔

انہوں نے پی ٹی آئی کے امیدوار چوہدری محمد الیاس کو شکست دے کر 94,196 ووٹ حاصل کیے۔

وہ 2018 کے پاکستان کے عام انتخابات میں حلقہ NA-71 (گجرات-IV) سے مسلم لیگ ن کے امیدوار کے طور پر دوبارہ این اے میں منتخب ہوئے۔

انہوں نے 88,588 ووٹ حاصل کیے، ایک بار پھر پی ٹی آئی کے امیدوار محمد الیاس چوہدری کو شکست دی، جنہوں نے 81،538 ووٹ حاصل کیے۔

وہ 2 ستمبر 1972 کو کوٹرہ عرب علی خان، ہریاں، ضلع گجرات میں پیدا ہوئے۔

ان کے والد 60 کی دہائی میں کوٹرہ یونین کونسل کے چیئرمین منتخب ہوئے اور ان کا خاندان مقامی سیاست میں کافی مشہور تھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

تازہ ترین