ٹویٹر ‘اچھے مواد’ والے بوٹس کے لیے مفت صرف لکھنے والے API کی اجازت دیتا ہے

18

ٹویٹر کے اعلان کے بعد کہ وہ 9 فروری سے اپنے API تک مفت رسائی بند کر دے گا، ایلون مسک نے ڈیڈ لائن سے کچھ دن پہلے کہا تھا کہ مائیکروبلاگنگ سائٹ صرف تحریری API پیش کرے گی "بوٹس جو مفت میں زبردست مواد پیش کرتے ہیں۔” ٹویٹ کیا۔

مسک کے مطابق، یہ اعلان ڈویلپرز کے تاثرات کے جواب میں کیا گیا۔

تاہم، یہ فیصلہ اس سوال کو کھلا چھوڑ دیتا ہے کہ "اچھا مواد” کیا ہے اور اس کا تعین کون کرتا ہے۔

ٹیک کرنچ نے رپورٹ کیا ہے کہ قاعدے کے نفاذ کے بعد کچھ بوٹس سوشل پلیٹ فارمز پر ایک نئی لائف لائن بن سکتے ہیں۔

پڑھیں ChatGPT استعمال کرنے کے طریقہ کے لیے یہاں کلک کریں۔

ٹویٹر نے پہلے فریق ثالث ایپس تک API کی رسائی کو معطل کر دیا تھا، اس کا حوالہ دیتے ہوئے یہ ایک "طویل مدتی اصول” کی خلاف ورزی ہے جس کی کوئی وضاحت نہیں تھی۔

کمپنی نے اپنی ڈویلپر کی شرائط کو بھی اپ ڈیٹ کیا تاکہ ایپس کو "لائسنس شدہ مواد کو استعمال کرنے یا ان تک رسائی حاصل کرنے سے روکنے کے لیے خدمات یا مصنوعات بنانے یا بنانے کی کوشش کریں جو ٹویٹر ایپلیکیشن کے متبادل یا اس سے ملتی جلتی ہوں۔”

ڈویلپرز ناراض ہوئے اور کمپنی کے فیصلے پر تنقید کی۔ خاص طور پر چونکہ آٹومیشن نے لوگوں کو مفت مواد اور بہتر خدمات فراہم کی ہیں۔

ٹیک کرنچ نے رپورٹ کیا ہے کہ بوٹس ہر روز لوگوں کے ذریعہ لطف اندوز ہوتے رہے ہیں اور یہ ٹویٹر کا لازمی حصہ رہے ہیں، ڈیریوس کازیمی کے مطابق، ڈویلپر جس نے 80 سے زیادہ بوٹس بنائے ہیں اور 2016 میں بوٹ ڈویلپر سمٹ کا اہتمام کیا ہے۔

بوٹ کو برقرار رکھنے کے لیے ادائیگی کرتے ہوئے مفت مواد فراہم کرنا بہت سے لوگوں کے لیے مشکل ہو سکتا ہے۔

ٹویٹر کے مفت API کے انتقال سے نہ صرف ڈویلپرز بلکہ طلباء، محققین اور ماہرین تعلیم بھی متاثر ہوتے ہیں۔ کیونکہ آپ اپنے مطلوبہ مواد کی ادائیگی کے متحمل نہیں ہو سکتے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

تازہ ترین
پی ٹی آئی اور سنی اتحاد کونسل کی حکمتِ عملی طے گروتھ ریٹ کی 2030ء تک بھی ریکوری نہیں ہو سکے گی: زرتاج گل بجٹ میں جہاں فارم 47 والے پٹری سے اترے وہاں روکیں گے: ثناء اللّٰہ مستی خیل پی ایس ایکس 100 انڈیکس کے ایک دن میں کئی ریکارڈز زرمبادلہ ذخائر میں 60 لاکھ ڈالر کی کمی اسٹاک ایکسچینج میں بجٹ کے بعد تیزی، انڈیکس 72 ہزار سے 75 ہزار پر آ گیا زیادہ آمدن والوں پر زیادہ ٹیکس کے نفاذ پر اعتراض نہیں ہونا چاہیے: وزیرِ خزانہ اورنگزیب جو راستہ شہباز شریف نے اختیار کیا وہ مشکل اور کٹھن ضرور ہے، حکومت کو کچھ وقت دیں: علی پرویز ملک اس بار بھی آئی ایم ایف کی دستاویز کو بجٹ کا نام دیا گیا: حافظ نعیم الرحمٰن سونا آج فی تولہ 1200 روپے سستا ہو گیا پیٹرول کی قیمت میں تقریباً 9 روپے کمی کا امکان وزیرِخزانہ کی پوسٹ بجٹ پریس کانفرنس سے قبل صحافیوں کا احتجاج پنجاب کا بجٹ آج پیش کیا جائے گا شعبۂ صحت کیلئے 27.86 ارب روپے مختص مالی سال 25-2024ء کیلئے سندھ پولیس کی بجٹ تجاویز