پاکستانی فورسز نے ترکئی میں ملبے تلے دبے چھ سے زائد افراد کو بچا لیا۔

67

اسلام آباد:

پاکستانی فورسز نے گزشتہ پیر کو شام کی سرحد کے قریب جنوب مشرقی ترکی میں آنے والے طاقتور زلزلے میں منہدم ہونے والی عمارتوں کے ملبے تلے پھنسے ایک 14 سالہ لڑکے سمیت چھ سے زائد افراد کو بچا لیا ہے۔

اتوار کو ترکی اور شام میں آنے والے تباہ کن زلزلے سے مرنے والوں کی تعداد 33,000 ہو گئی، اقوام متحدہ نے خبردار کیا ہے کہ حتمی تعداد دوگنی ہو سکتی ہے۔

حکام اور طبی ذرائع نے بتایا کہ پیر کو آنے والے 7.8 شدت کے زلزلے میں ترکی میں 29,605 اور شام میں 3,574 افراد ہلاک ہوئے، جس سے تصدیق شدہ کل تعداد 33,179 ہو گئی۔

پاکستان نے امدادی سرگرمیوں میں مدد کے لیے اپنی ملٹری سرچ اینڈ ریسکیو ٹیم بھیج دی ہے۔

مزید پڑھیں: ترکی اور شام میں زلزلے سے ہلاکتوں کی تعداد 33000 سے تجاوز کر گئی

پاکستانی فوج نے 120 گھنٹے کی محنت میں چھ سے زائد افراد کو بازیاب کرایا اور 80 لاشیں نکال کر ورثا کے حوالے کر دیں۔

بین الاقوامی میڈیا نے ترکئی میں امدادی سرگرمیوں میں پاکستانی فوج کے تعاون کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ اس نے ترک عوام کے دل جیت لیے ہیں۔

ذرائع کے مطابق، پاکستانی فوج کی ٹیمیں ترکئی میں 10 مقامات پر مسلسل امدادی کارروائیوں میں مصروف تھیں۔

تفصیلات کے مطابق ٹیم نے زلزلے کے 138 گھنٹے بعد 14 سالہ لڑکے کو ریسکیو کیا جو کہ ایک بڑی کامیابی ہے۔

ٹی آر ٹی ورلڈ نے پاکستانی فوج کے ایک افسر سے ٹیم کی پیشہ ورانہ خدمات اور تلاش کی کوششوں کے نتائج کے بارے میں خصوصی گفتگو کی۔

افسر نے ٹی آر ٹی ورلڈ کو بتایا کہ انتہائی مشکل حالات کے باوجود پاکستان آرمی کی ریسکیو ٹیم نے لڑکے کو بچانے کے لیے پیشہ ورانہ مہارت اور لگن کا عملی مظاہرہ کیا۔

پولیس نے بتایا کہ ایک مقامی ٹیم نے ملبے تلے دبے پانچ افراد کو بھی بچایا اور ان کی شناخت کی۔ افسر نے کہا، "لوگوں کو بچانے کے لیے ملبہ ہٹانے کا کام جاری ہے،” انہوں نے مزید کہا کہ ترک عوام نے پاک فوج کی ٹیم کی پیشہ ورانہ خدمات کی تعریف کی۔

(اے ایف پی کے ان پٹ کے ساتھ)

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

تازہ ترین