امریکہ کے جاسوس غبارے کو مار گرانے پر چین ابل پڑا

1

واشنگٹن:

بائیڈن انتظامیہ نے ہفتے کے روز امریکہ کے بحر اوقیانوس کے ساحل پر ایک مبینہ چینی جاسوس غبارے کو مار گرانے پر پینٹاگون کی تعریف کی، لیکن چین نے اس اقدام پر "سخت عدم اطمینان” کا اظہار کرتے ہوئے "ضروری ردعمل” کا مطالبہ کیا۔

پینٹاگون کے حکام نے بتایا کہ طیارہ کئی دنوں تک شمالی امریکہ کے اوپر پرواز کرتا رہا، اس سے پہلے کہ جنوبی کیرولینا کے جنوب مشرقی ساحل پر ایک F-22 طیارے سے فائر کیے گئے میزائل کو نشانہ بنایا گیا، جہاں یہ 47 فٹ کی گہرائی میں نسبتاً گہرے پانی میں گرا۔

امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے چین کی طرف سے اپنی خودمختاری کی ناقابل قبول خلاف ورزی کے جواب میں آپریشن کو ایک "قانونی عمل” قرار دیا۔ لیکن چین کی وزارت خارجہ نے اتوار کے روز "شہری” طیارے کو مار گرائے جانے کو "واضح طور پر ایک حد سے زیادہ رد عمل اور بین الاقوامی مشق کی سنگین خلاف ورزی” قرار دیتے ہوئے مذمت کی۔

ایک سینیئر دفاعی اہلکار نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ ہفتے کی دوپہر فوج کا پہلا موقع تھا کہ وہ غبارے کو "اس طرح سے نیچے اتارے جس سے امریکیوں کی حفاظت کو کوئی خطرہ نہ ہو۔”

سوشل میڈیا پر پوسٹ کی گئی عینی شاہدین کی ویڈیوز میں، غبارہ ایک سفید پف میں گرتا ہوا نظر آیا، جس کا ملبہ نیچے بحر اوقیانوس میں گر گیا۔ ٹویٹر صارف ہیلی والش نے پوسٹ کیا کہ اس نے جنوبی کیرولائنا کے مشہور ریزورٹ ٹاؤن مرٹل بیچ میں "دھماکے کو سنا اور محسوس کیا”۔

صدر جو بائیڈن، جنہوں نے ہفتے کے اوائل میں غبارے کا "خیال رکھنے” کا وعدہ کیا تھا، نے اس میں شامل لڑاکا پائلٹوں کو مبارکباد دی۔ "انہوں نے اسے کامیابی سے اتار لیا۔ بائیڈن نے میری لینڈ میں صحافیوں کو بتایا کہ وہ ہوا بازوں کو مبارکباد دینا چاہتے ہیں۔”

لیکن ریپبلکنز نے بائیڈن پر ان کے ایک چینی غبارے کو سنبھالنے پر تنقید کی ہے جسے کئی دنوں تک ملک بھر میں بہتے رہنے کے بعد مار گرایا گیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ یہ فلائی اوور بیجنگ کی طرف سے ایک ڈھٹائی کی کوشش تھی جس کا وقت بائیڈن کو ان کے اسٹیٹ آف دی یونین خطاب سے پہلے (کل) کو شرمندہ کرنے اور پھر سیکرٹری آف اسٹیٹ انتھونی برنکن کے منسوخ شدہ دورہ چین میں خلل ڈالنے کا تھا۔

جمعرات کو یہ تنازعہ اس وقت شروع ہوا جب امریکی حکام نے کہا کہ وہ امریکی آسمانوں میں ایک بڑے چینی "نگرانی والے غبارے” کا سراغ لگا رہے ہیں۔ ابتدائی ہچکچاہٹ کے بعد، بیجنگ نے "ایئر شپ” کی ملکیت کو تسلیم کیا لیکن کہا کہ یہ ایک نجی موسمی غبارہ تھا جو بالکل اڑا دیا گیا تھا۔

حالیہ تاریخ میں یہ پہلا موقع نہیں تھا کہ اس طرح کے طیارے نے امریکی سرزمین پر پرواز کی ہو۔ پینٹاگون کے ایک اہلکار نے ہفتے کے روز بتایا کہ وہ پہلی بار 28 جنوری کو الاسکا کے اوپر سے امریکی فضائی حدود میں داخل ہوا اور کینیڈا کے اوپر سے بہتا ہوا اور کچھ دن بعد واپس امریکہ آیا۔

سینئر دفاعی اہلکار نے کہا کہ حالیہ تاریخ میں یہ پہلا موقع نہیں تھا کہ اس طرح کے طیارے نے امریکی سرزمین پر پرواز کی ہو، لیکن یہ امریکہ میں گزارا جانے والا سب سے طویل وقت تھا۔ بائیڈن انتظامیہ کے دن۔

ایک سینیئر دفاعی اہلکار نے کہا کہ فوج نے طے کیا کہ فضائی جہاز اپنی پرواز کے دوران امریکہ کے لیے کوئی بڑا خطرہ نہیں تھا، اور یہ کہ "امریکی سرزمین پر نگرانی والے غبارے کی پرواز ہمارے لیے معلوماتی تھی،” انہوں نے مزید کہا، لیکن اس کی کوئی تفصیلات نہیں بتائی گئیں۔ یہ نہیں کیا.

ایک ٹیم پہلے ہی غبارے کے ملبے کو نکالنے کے لیے کام کر رہی تھی، سینئر فوجی حکام نے ہفتے کے روز بتایا کہ ایک اسٹریٹجک جوہری میزائل زیر زمین سائلو میں ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

تازہ ترین
فروری کے آخری کاروباری روز مثبت رجحان، انڈیکس 875 پوائنٹس بڑھ گیا وزارت خزانہ نے ماہانہ اکنامک اپ ڈیٹ آؤٹ لک رپورٹ جاری کردی سونے کی قیمت میں آج کتنا اضافہ ہوا؟ وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز کی ہدایت پر میواسپتال کی ایمرجنسی میں نئے اسٹریچر اور بیڈز پہنچ گئے معاشی ماہرین کا پی ٹی آئی کے آئی ایم ایف کو خط پر ردِعمل پی ایم ڈی سی نے عام ڈاکٹروں کو ایستھیٹک میڈیسن کی پریکٹس سے روک دیا سونے کی فی تولہ قیمت میں 1100 روپے کی کمی 100 انڈیکس الیکشن کے بعد بلند ترین سطح پر بند چین نے پاکستان کا 2 ارب ڈالر کا قرض رول اوور کردیا نہار منہ ہلدی کا پانی پینے کے صحت پر 10 حیران کُن فوائد پاکستان میں 8 فروری کو انتہائی متنازع انتخابات کے باعث سیاسی خطرات بلند ہیں، موڈیز حکومت نیپرا کے غلط فیصلوں کا نوٹس لے، صدر کے سی سی آئی افتخار شیخ کاروبار کا ملا جلا دن، 100 انڈیکس میں 86 پوائنٹس کی کمی سونے کی فی تولہ قیمت میں 100 روپے کا اضافہ حکومت نے رواں مالی سال 16 فروری تک بینکنگ شعبے سے کتنا قرض لیا؟