وزارتِ خزانہ کا آئی ایم ایف کو اخراجات کم کرنے کا پلان پیش

5
—فائل فوٹو

وزارتِ خزانہ نے بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کو اخراجات کم کرنے کا پلان پیش کر دیا۔

ذرائع کے مطابق ایک سال میں وفاقی حکومت 300 ارب روپے سے زائد اخراجات کم کرے گی، وفاقی وزارتوں کی طرف سے نئی گاڑیاں خریدنے پر مکمل پابندی رہے گی۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ 1 سال سے خالی گریڈ 1 سے 16 کی تمام پوسٹوں کو ختم کر دیا جائے گا، وفاقی حکومت صوبوں کے ترقیاتی منصوبوں میں فنڈنگ نہیں کرے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت صرف اہم اور قومی نوعیت کے ترقیاتی منصوبوں کے لیے وسائل دے گی، انفرااسٹرکچر کے منصوبے پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت کیے جائیں گے۔

ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت کوئی نئی یونیورسٹی قائم نہیں کرے گی، صوبائی حکومتیں اپنے ماتحت آنے والی جامعات کی خود فنڈنگ کریں گی۔

ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ آئندہ مالی سال سے دفاع اور پولیس کے علاوہ نئی بھرتیوں کے لیے رضا کارانہ پنشن اسکیم پر بھی غور کیا جا رہا ہے، آئی ایم ایف نے پاکستان کو پنشن سسٹم کا جائزہ لینے کی ہدایت کر رکھی ہے۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ آئندہ مالی سال سے اراکینِ اسمبلی کی ترقیاتی اسکیموں پر مکمل پابندی لگنے کا بھی امکان ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

تازہ ترین
اسلام آباد و لورالائی کے ماحولیاتی نمونوں میں پولیو وائرس کی تصدیق عید پر مریضوں و لواحقین کو ناشتہ و کھانا دینگے: لاہور جنرل اسپتال انتظامیہ مویشی منڈی میں بشتر جانور بک گئے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ، بجلی قیمت میں 3 روپے 41 پیسے اضافے کی درخواست سونے کی فی تولہ قیمت میں 200 روپے کی کمی کراچی میں عید الاضحی سے قبل سبزیوں کی قیمتوں میں اضافہ مقامی طور پر تیار بچوں کے دودھ پر 18 فیصد سیلز ٹیکس لگانے کی تجویز پر غور کون زیادہ گوشت کھاتا ہے! مرد یا خواتین؟ پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں اس مرتبہ کاروباری ہفتہ ریکارڈ ساز رہا ٹی ڈیپ کی زیر سرپرستی 11 پاکستانی کمپنیوں کے وفد کا دورہ ہیوسٹن، تجارتی معاملات پر گفتگو نیپرا نے بجلی کے بنیادی ٹیرف میں 5.72 روپے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی پیٹرول کی قیمت میں بڑی کمی کردی گئی پاکستان شیئر بازار نے 77 ہزار کی حد عبور کرلی کریڈٹ یا ڈیبٹ کارڈ قبول نہ کرنیوالے دکاندار کا کاروبار سِیل ہو گا: ایف بی آر ڈیفالٹ سے دوچار کمپنیوں کیلئے ریگولرائزیشن اسکیم متعارف