پاکستان لٹریچر فیسٹیول کا شاندار آغاز

19

کراچی:

لاہور میں الحمرا آرٹس کونسل میں پاکستان لٹریری فیسٹیول (PLF) کے ساتھ ویک اینڈ لاہور کے باسیوں کے لیے ایک ادبی پناہ گاہ تھا۔ اپنی نوعیت کا ایک تاریخی واقعہ، لٹریری فیسٹیول تین روزہ سیشنز، پرفارمنسز اور انٹرایکٹو نمائشوں پر محیط تھا جس میں آرٹ، شاعری، سماجی، اقتصادی اور تفریحی منصوبوں اور ملک کے بھرپور ادب، ثقافت اور افسانوی شخصیات کا جشن منایا گیا۔

یہ بات کراچی میں آرٹس کونسل آف پاکستان کے صدر احمد شاہ نے ٹیلی فون پر گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ ایکسپریس ٹریبیون "اس سے 100 گنا زیادہ،” انہوں نے کہا کہ کس طرح یہ تہوار ایک "حیران کن کامیابی” تھا اور اس سے بھی آگے بڑھ گیا جس کی ان کی توقع تھی۔

"میں نے کراچی میں بہت ساری عوامی تقریبات کی ہیں۔ میں اس شہر اور اس کے لوگوں کو جانتا ہوں اور آرام دہ ہوں، لیکن یہ پہلا موقع تھا جب میں اس شاندار تقریب کو لاہور لے کر گیا ہوں۔” اس سے ایک رات پہلے میں قدرے نروس تھا، لیکن پہلا دن ختم ہونے کے بعد مجھے سکون ملا۔ میں نے کراچی میں بھی اتنی دلچسپی کبھی نہیں دیکھی۔

شاہ، لاہور کے برعکس، شہر کے ثقافتی مرکز میں، کوئی ثقافتی یا ادبی تقریبات نہیں ہوتی ہیں، لیکن یا تو عوام کے لیے کھلا نہیں ہے یا پھر جامع اور قابل رسائی ہے۔ اگر وہاں ہے تو غریب لوگ جانے سے پہلے دو بار سوچیں گے، چاہے یہ مفت ہی کیوں نہ ہو۔ میں اس کے بارے میں عجیب محسوس کروں گا، "انہوں نے کہا۔

تین روزہ ادبی میلے کی افتتاحی تقریب الحمرا آرٹس کونسل کے ہال 1 میں منعقد ہوئی۔ گراؤنڈ کافی بڑے ہیں لیکن بہت سے لوگوں نے تقریب کو باہر سے سکرینوں پر دیکھا۔ شاہ نے کہا، ’’یہی اس بات کا ثبوت تھا کہ لوگ اس شہر میں ادب اور فن کے ذائقے کے کتنے پیاسے تھے۔

ایونٹ میں آرٹ کو اس کی تمام شکلوں میں شامل کیا گیا تھا، جس میں ہر عمر کے لیے سیشنز اور سرگرمیاں شامل تھیں۔ لائیو پینٹنگز، کلاسیکی ڈانس پرفارمنس، کتابوں کی دکانیں، کھانے، کنسرٹس، موسمیاتی تبدیلی، لاہور میں ہوا کا خراب معیار، معاشیات اور دیگر موجودہ مسائل پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ شاہ نے یاد کیا کہ اردو، پنجابی اور سرائیکی ادب میں نوجوانوں کی دلچسپی کتنی زبردست تھی۔ مجھے اس کی توقع تھی۔ لیکن جس چیز نے مجھے حیران کیا وہ یہ تھا کہ اگرچہ کنسرٹ مشاعرہ کے بعد شروع ہوا لیکن ہال میں موجود کوئی بھی اسے ختم کرکے کنسرٹ میں جانا نہیں چاہتا تھا۔ اقبال، فیض، ن م راشد اور دیگر کے ساتھ سیشنز تھے، سب بک گئے۔ "

جس چیز نے انتظامیہ کو اطمینان اور کامیابی کے ناقابل یقین احساس کے ساتھ چھوڑا ہے وہ یہ ہے کہ سرکاری اسکولوں، کالجوں اور یونیورسٹیوں میں طلباء فن اور ثقافت میں اسی طرح حصہ لیتے ہیں جس طرح اشرافیہ کے اسکولوں میں جس میں کوئی کمتریت نہیں ہے، اور اسی طرح میں حصہ لے رہا تھا۔ .

افتتاحی تقریب میں اپنے خطاب میں شاہ نے کہا کہ جس ملک کی ثقافت مردہ ہو وہ زندہ نہیں رہ سکتا۔ "ہمارے معاشرے میں بہت نفرت ہے اور اس منفی کو ختم کرنے کے لیے ہمیں مل کر کام کرنا چاہیے، میں تمام اکائیوں کو دوستی کا پیغام لے کر لاہور آیا ہوں، ہمیں ثقافتی سرگرمیوں کو فروغ دینا چاہیے، لاہور، ملتان اور سندھ اسی کا حصہ ہیں۔ سندھ کی تہذیب لیکن لاہور کی اپنی تاریخ ہے، یہ ثقافت اور ثقافت کے ساتھ ایک قدیم ثقافتی شہر ہے، اور حکام نے اس کانفرنس کے انعقاد پر اصرار کیا جس میں تمام ثقافتوں اور ان کے ورثے کو اپنایا جائے۔”

اپنی کامیابی کے باوجود ایونٹ کو دو بڑے مسائل کا سامنا کرنا پڑا۔ ضیا محی الدین کی سیشن اس وقت خرابی صحت اور لیجنڈ شاعر امجد اسلام امجد کی ناگہانی موت کی وجہ سے منسوخ کر دی گئی تھیں۔ "میں ضیا صاحب کے سیشن کا منتظر تھا۔”

شاعر کے حوالے سے شاہ نے کہا کہ آرٹس کونسل کراچی کو بھی ایسی ہی صورتحال کا سامنا ہے۔ فمیدہ ریاض اس دن انتقال کر گئیں جس دن ان کا کراچی میں سیشن ہونا تھا۔ "ہم انہیں دوبارہ ساتھ نہیں رکھ سکتے، لیکن ہم کیا کر سکتے ہیں کہ ان کے کام کو جشن منانے، یاد رکھنے اور عزت دینے کے موقع میں بدل دیں۔” ان کے اعزاز میں ان کی تصویر کے ساتھ ایک خالی کرسی رکھی گئی اور آگے بڑھنے لگے۔ سندھ کے وزیر تعلیم و ثقافت سعید سردار علی شاہ نے بھی اپنے خطاب کا آغاز شاعر مرحوم کی ایک نظم سے کیا، جس میں کہا گیا کہ اگر وہ دور ہوں تو ہم سے دور نہیں ہوسکتے۔

اختتامی تقریب میں فیسٹیول نے ناہید، دادا اور ناہید صدیقی کو ان کی خدمات اور کام کے لیے اعزاز سے نوازا اور انہیں لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈز سے نوازا۔ تقریب کا اختتام ثقافت، معاشرت اور پاکستان کے حوالے سے انور مقصود کے کلام پر ہوا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

تازہ ترین
ملک سے اضافی چینی کی برآمد کیلئے راہ ہموار ہونے لگی پی ایس ایکس میں مسلسل دوسرے روز کاروبار کا منفی رجحان نان فائلرز کی موبائل سمز بلاک کرنے کے مثبت اثرات، 7167 نے ٹیکس گوشوارے جمع کرا دیے، ذرائع خسرہ کی بڑھتی وبا، محکمہ صحت پنجاب نے الرٹ جاری کردیا خسرے سے 6 بچوں کی اموات، ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی ٹیم کا متاثرہ علاقے کا دورہ ایل پی جی کی قیمت میں نمایاں کمی سونا آج 2400 روپے مہنگا ہو کر فی تولہ کتنے کا ہو گیا؟ ملک میں مہنگائی میں کمی ہو رہی ہے، رپورٹ وزارت خزانہ ملک میں 3 ہزار ڈبہ پیٹرول پمپ اسٹیشن چل رہے ہیں، چیئرمین اوگرا مرغی کا گوشت مہنگا ہوکر 431 روپے کلو ہو گیا شوگر ایڈوائزری بورڈ کا اہم اجلاس کل لاہور میں طلب پلان کوآرڈینیشن کمیٹی کا اجلاس 31 مئی کو طلب کبیر والا میں خسرہ سے 6 بچے جاں بحق ہوئے: وزیر صحت پنجاب سونے کی فی تولہ قیمت 500 روپے کم ہوگئی تھیلیسمیا و ہیموفیلیا کے پھیلاؤ کی ذمے دار ہماری اپنی غلطیاں ہیں: وزیرِ صحت سندھ